126

سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ سیدنا حسن رضی اللہ عنہ کی شہادت کے بینیفشری تھے؟

سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ سیدنا حسن رضی اللہ عنہ کی شہادت کے بینیفشری تھے؟
کہتے ہیں کہ سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ نے لوگوں کا مال لوٹا ،لوگوں کو قتل کروایا، جس سے اختلاف رائے ہوا اس کو قتل کروادیا،اگر حسن زندہ رہےتو کبھی بھی یہ انگارہ بھڑک سکتا ہےلہذا انہیں زہر دے کر شہید کر دیا جائے، اب کہتے ہیں کہ کس نے کیا؟جو اس کا  بینیفشری ہے اس نے ہی کیا ،نام لینے کی ضرورت نہیں ہے۔
مرزا صاحب کہتے ہیں کہ سیدنا حسن رضی اللہ عنہ کو سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ نے شہید کروایااس کی دلیل یہ ہے کہ اسکے  بینیفشری سیدنامعاویہ رضی اللہ عنہ ہیں یعنی سیدنا حسن رضی اللہ عنہ کی شہادت کا فائدہ جو ہےوہ سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ کو ہوا، لہذا ثابت یہ ہوا کہ سیدناحسن رضی اللہ عنہ کو سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ نے شہید کروایا۔نعوذ باللہ۔
مرزا صاحب کی کتنی بڑی جسارت ہےاور لوگ پھر بھی کہتے ہیں کہ وہ حق بولتا ہے،سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ کو کیا فائدہ ہوا سیدناحسن رضی اللہ عنہ کو شہید کروانے کا؟سیدنا حسن رضی اللہ عنہ تو سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ کے لیے بلکل بے ضرر تھے، انہوں نے اپنی خلافت خود سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ کی جھولی میں رکھ دی تھی اور خود ان کے ہاتھ پر بیعت کر کے ان کی رعایا بن گئے تھے۔اس سے بڑی سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ کے لیے اطمینان والی بات کیا ہوسکتی تھی؟جب خود انہوں خلافت نے سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ کے سپرد کردی تووہ سیدنا حسن رضی اللہ عنہ خوش ہونگے یا ناراض ہونگے؟بحر حال سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ کو سیدنا حسن رضی اللہ عنہ کو شہید کرنے یا کروانے کاکوئی فائدہ نہیں تھا،نہ ہی ظاہری طور پر ایسا کچھ نظر آتا ہےاور یہ بہت بڑا جھوٹ ہے،مرزا صاحب کو اللہ سے ڈر جانا چاہیے اوراس جھوٹ سے انہیں اعلانیہ توبہ کرنی چاہیے۔
اس سے اگلی بات یہ ہے کہ ناصبی ظالم یہ کہتے ہیں کہ سیدنا عثمان رضی اللہ عنہ کی شہادت کے بینیفشری سیدناعلی رضی اللہ عنہ تھے،سیدنا عثمان رضی اللہ عنہ شہید ہوئےاس کے بعد خلافت تو سیدنا علی رضی اللہ عنہ کو ہی ملنی تھی،وہ کہتے ہیں کہ سیدناعلی رضی اللہ عنہ نے باغیوں کے ساتھ مل کر سیدناعثمان رضی اللہ عنہ کو قتل کروایااس کے بعد خود خلیفہ بن کر بیٹھ گئے۔ نعوذ باللہ۔
ہم تو ایسا سوچنے کو بھی ایمان لیوہ سمجھتے ہیں، اور ناصبیوں کی دلیل بھی وہی ہے جو مرزا صاحب پیش کرتے ہیں،ہم تو کہتے ہیں کہ ناصبی بھی جھوٹے ہیں اور نیم رافضی بھی،دونوں ہی بہتان ہیں،نہ سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ سیدنا حسن رضی اللہ عنہ کو شہید کرنے والے ہیں اور نہ ہی سیدنا علی رضی اللہ عنہ سیدنا عثمان رضی اللہ عنہ کو شہید کرنے والے ہیں۔لیکن ناصبی تومرزا صاحب والی دلیل کو ہی پیش کرتے ہیں کہ شہادت عثمان رضی اللہ عنہ کا فائدہ کسے ہونے والا تھا؟فائدہ تو سیدنا علی رضی اللہ عنہ کوہونے والا تھا کیونکہ وہ خلیفہ بننے والے تھے لہذاشہادتِ عثمان رضی اللہ عنہ سیدنا علی رضی اللہ عنہ نے کروائی ہے۔ نعوذ باللہ۔
اللہ تبارک وتعالیٰ ان لوگوں کو ہدایت جو صحابہ کرام رضی اللہ عنھم اور اہل بیت علیہم السلام پر اس طرح کے جھوٹے الزام لگاتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.